مصلحت - Hyderabadi | My city Hyderabad Deccan | History Society Culture & Urdu Literature

2009/07/29

مصلحت

بجھا ڈالا چراغوں کو یہ منظر خود نہیں دیکھا
سر اپنا کر لیا تن سے جدا خنجر نہیں دیکھا
رسمی چاہت جنوں کی حد کو چھوتی تھی مگر تُو نے
بہت اچھا کیا جاتے ہوئے مڑ کر نہیں دیکھا !


- سلیم مقصود

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں