تعمیر نیوز - تازہ ترین

ہندوستان: ہندوستان: شمالی ہند: جنوبی ہند: مشرقی مغربی ہند: تجزیہ: تجزیہ:
ہند - تاریخ/تہذیب/ثقافت: تاریخ دکن: مسلمانان ہند: کلاسیکی ادب: اردو ہے جسکا نام: ناول: جنسیات:

بتاریخ : ‪2009-12-15

مزاحیہ شاعری - خواہ مخواہ حیدرآبادی

حیدرآباد کے مشہور مزاحیہ شاعر

خواہ مخواہ حیدرآبادی
کے چند منتخب اشعار ملاحظہ فرمائیں ۔۔۔
***

خواہ مخواہ جو ہر محفل کی جان تھا
ایک عرصہ ہوا بیوی کو پیارا ہو گیا

بیوی کو سوت دے یا مجھے موت دے خدا
اٹھتے نہیں ہیں ہاتھ میرے اِس دعا کے بعد

عمرِ دراز مانگ کے لائے تھے چار بال
دو آرزو میں جھڑ گئے دو انتظار میں

میرے گھر میں آسودگی اس لئے ہے
کوئی چیز ضرورت سے زیادہ نہیں ہے

بہتر ہے موت خواہ مخواہ ، دیتی تو ہے کفن
گر زندگی کا بس چلے ، کپڑے اُتار لے

محبت میں مرتے تو ہیں خواہ مخواہ سب
جنازہ کسی کا نہ دیکھا نکلتے ہوئے

معشوق ہو حسیں یہ ضروری نہیں ، مگر
عاشق کو چاہئے کہ وہ اندھا ضرور ہو

حیدرآبادی زبان میں:
بزدل ہے وہ جو جیتے جی مرنے سے ڈر گیا
ایک مئیچ تھا جو کام ہی کچھ اور کر گیا
جب موت آکو میرے کو کرنے لگی سلام
میں وعلیکم سلام بولا اور مر گیا !!
===
مئیچ = میں ہی
آکو = آ کر
میرے کو = مجھے

0 تبصرے:

تبصرہ میں مسکانوں کے استعمال کیلئے متعلقہ مسکان کا کوڈ کاپی کریں
:));));;):D;):p:((:):(:X=((:-o
:-/:-*:|8-}:)]~x(:-tb-(:-Lx(=))

تبصرہ کیجئے